معاشرت - طلاق و خلع

Pakistan

سوال # 1667

میں جاننا چاہتا ہوں کہ میرے بھائی نے اپنی حاملہ بیوی سے کہا کہ اگر میں آئندہ تمہارے پاس آؤں تو تمہیں تین طلاق۔ اس سلسلے میں کیا حکم ہوگا؟

Published on: Sep 18, 2007

جواب # 1667

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 1451/ ھ= 1134/ھ


 

حالت حمل میں کسی شرط پر طلاق کو شوہر معلق کردے تو تعلیق درست ہوجاتی ہے اور جب شرط کا وجود ہوگا اسی وقت طلاق واقع ہوگی۔ پس صورت مسئولہ میں آپ کے بھائی جب بھی اپنی بیوی کے پاس آئیں گے تو تین طلاق (حسب شرط) واقع ہوکر بیوی حرام ہوجائے گی، آپ کے بھائی کو رجعت یا تجدید نکاح کا بغیر حلالہٴ شرعیہ کے استحقاق نہ رہے گا اور مطلقہ بیوی کو حق ہوجائے گا کہ بعد عدت آپ کے بھائی (اپنے طلاق دینے والے شوہر) کے علاوہ جس سے چاہے اپنا عقد ثانی کرلے۔ بخاری شریف: ج۲،ص۷۹۱۔ فتاویٰ الہندیہ: ج۱، ص۵۰۱)وغیرہ میں تصریح ہے۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات