معاشرت - طلاق و خلع

pakistan

سوال # 164588

اگر طلاق کا لفظ اس طرح منہ سے نکلے مثلا کوئی کہے قرآن کی سورہ طلاق کی تلاوت کرو آدمی کہتا ہے طلاق۔ آدمی کا دھیان کسی اور طرف ہے لیکن اسے سمجھ میں آتا ہے سورہ طلاق کی تلاوت کا کہ رہا ہے پھر وہ سمجھتا ہے ۔

Published on: Sep 12, 2018

جواب # 164588

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1417-1204/D=12/1439



اس طرح خیالات آنے اور سوچنے سے طلاق نہیں پڑتی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات