معاشرت - طلاق و خلع

Pakistan

سوال # 156818

اگر کوئی اپنی بیوی سے بولے کہ اگر تم نے جھوٹ بولا تو ہمارے تعلقات ختم ہوجائیں گے، تو اس پر طلاق واقع ہوگئی یا نہیں؟اور اس کا حل کیا ہے؟

Published on: Dec 14, 2017

جواب # 156818

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:319-287/L=3/1439



اگر شوہر نے یہ الفاظ بہ نیت طلاق کہے ہیں تو بیوی کے جھوٹ بولنے کی صورت میں ایک طلاقِ بائن بیوی پر واقع ہوجائے گی؛البتہ تراضی طرفین سے عدت کے اندر یا بعد عدت دوبارہ نکاح کرنا جائز ہوگا۔ ولو قال لہا لا نکاح بیني وبینک، أو قال: لم یبق بیني وبینک نکاح، یقع الطلاق إذا نویٰ۔ (الفتاویٰ الہندیة ۱/۳۷۵)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات