معاشرت - طلاق و خلع

india

سوال # 156712

اگر کسی آدمی نے اپنے سُسر سے اَن بَن کی وجہ سے غصہ کی حالت میں اپنی بیوی کو کہا کہ تیرے باپ کی وجہ سے تجھے گھر بٹھاتا ہوں اور طلاق کی نیت نہیں تھی تو اِس صورت میں طلاق کا کیا حکم ہے ؟

Published on: Nov 27, 2017

جواب # 156712

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:345-285/B=3/1439



صورت مسئولہ میں اس جملہ سے کوئی طلاق واقع نہ ہوئی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات