عبادات - طہارت

india

سوال # 172958

اگر ایک آدمی ندی میں غسل جنابت کرے اور وہ کلی نہ کرے اور نہ ناک میں پانی ڈالے تو کیا اس کا غسل جنابت ہوجائے گا یا نہیں؟
براہ کرم، جواب دیں۔

Published on: Sep 2, 2019

جواب # 172958

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1324-1121/D=1/1441



کلی کرنا اور ناک میں پانی ڈالنا غسل کے فرائض میں سے ہے بغیر اس کے غسل صحیح نہ ہوگا پس صورت مسئولہ میں ندی میں غسل کے دوران منہ کے اندر اچھی طرح پانی چلا گیا اسی طرح ناک کے اندر بھی چلا گیا تو غسل ادا ہوگیا خواہ بالارادہ اس نے کلی اور ناک میں پانی ڈالنے کا عمل نہ کیا ہو۔



لیکن اگر منہ اور ناک میں پانی نہیں گیا تو غسل درست نہیں ہوا اور جنابت سے پاکی حاصل نہیں ہوئی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات