عبادات - طہارت

New Zealand

سوال # 165664

اگر کسی نے انگلی توڑ دی اور اس کا آپریشن ہوا ہو اور ڈاکٹر کہے کے نہ تو ہلائے جائے نہ ہی گیلی ہونے پائے اندر تار ڈال کر تروپہ بھرا گیا ہوا ہو تو کلاسک پورے اس ہاتھ پر کر کے مسح کریں یا اور کوئی بدل ہے ؟

Published on: Oct 31, 2018

جواب # 165664

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 118-116/L=2/1440



اگر پٹی پر مسح کرنا مضر ہو تو اس پر مسح ترک کرنے کی گنجائش ہوگی؛ البتہ اس کے قریب کا جو حصہ ہو کہ اس پر خفیف انداز میں اگر پانی ڈالا جاسکتا ہے تو احتیاط سے اس حصے کو تر کرلیا جائے، اور اس کے علاوہ ہاتھ کے دیگر حصے کو دھو لیا جائے، محض انگلی پر پٹی ہونے کی وجہ سے پورے ہاتھ پر جوازِ مسح کا حکم نہ ہوگا۔



وإذا زادت الجبیرة علی نفس الجراحة، فإن ضرہا الحل والمسح، یمسح علی مایوازي الجراحة، ومایوازي موضعاً صحیحاً، وإن ضرہا المسح لا الحل یمسح علی الخرقة التي علی رأسہا، ویغسل ما حولہا، وإن لم یضرہ المسح ولا الحل غسل ما حولہا ومسحہا نفسہا۔ (الہندیة: ۱/۸۹، کتاب الطہارة ، الباب الخامس: في المسح علی الخفین، زکریا، دیوبند) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات