عبادات - طہارت

India

سوال # 165213

مجھے کبھی کبھی گندہ اور برا خواب دکھتا ہے لیکن احتلام نہیں ہوتا ہے تو کیا ہم پر غسل واجب ہے اور کبھی کبھی برا خواب دکھتا ہے تو احتلام ہونے ہی والا ہوتا ہے کہ ہماری آنکھ کھل جاتی ہے تو کیا اس صورت میں غسل کرنا ہے ؟ دونوں صورتوں کا الگ الگ جواب عنایت فرمائیں مہربانی ہوگی۔

Published on: Oct 18, 2018

جواب # 165213

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 44-42/D=2/1440



پہلی صورت میں غسل واجب نہیں ہوگا، اس لئے کہ محض برا خواب دیکھنے سے غسل واجب نہیں ہوتا ہے جب تک کہ کپڑے میں تری نہ دیکھے اور دوسری صورت میں اگر بیدار ہونے کے بعد انزال نہیں ہوا تو غسل واجب نہیں ہوگا، اور اگر انزال ہوگیا تو غسل واجب ہو جائے گا۔ وفرض الغسل عند خروخ منی من العضو ․․․․ منفصل عن مقرّہ ․․․․․ بشہوة ․․․․․․ وإن لم یخرج من رأس الذکر بہا ․․․․․․ وعند روٴیة مستیقظ منیاً أو مذیاً وإن لم یتذکر الاحتلام (الد المختار: ۱/۲۶۵-۳۰۱، ط: زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات