عبادات - طہارت

Dubai

سوال # 157572

میری عمر 24 سال ہے ، مجھے پتا نہیں چلتا کہ احتلام ہوا ہے کہ نہیں،شلوار کو ہاتھ لگا کے دیکھنا پڑتاہے ، اگر گیلی ہو تو معلوم پڑتا۔اس کا کیا حل ہو سکتا ہے ؟جس سے مجھے معلوم ہو سکے کہ مجھ پے غسل واجب ہو گیا ہے ؟

Published on: Dec 31, 2017

جواب # 157572

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:386-315/N=1439



اگر صبح سوکر اٹھنے کے بعدآپ کو احتلام یاد نہ ہو ؛ البتہ جسم یا کپڑے میں کوئی تراوٹ یا دھبہ ہو اوریقین یا غالب گمان یہ ہو کہ وہ منی ہے تو ایسی صورت میں آپ پر غسل فرض ہوگا، اسی طرح اگر تراوٹ یا دھبہ کے بارے میں منی اور مذی کایا منی اور ودی کا یا منی، مذی اور ودی کا شک ہوتو ان تینوں صورتوں میں بھی احتیاطاً غسل واجب ہوگا۔ اور اگر احتلام یاد نہ ہونے کی صورت میں مذی کا یقین ہو یا مذی اور ودی کا شک ہو یا ودی کا یقین ہو تو ان تین صورتوں میں غسل واجب نہ ہوگا۔ اور اگر احتلام یاد ہو اور تراوٹ یا دھبہ کے بارے میں ودی کا یقین ہو تو بھی غسل واجب نہ ہوگا (شامی، ۱: ۳۰۱، مطبوعہ: مکتبہ زکریا دیوبند)۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات