عبادات - طہارت

Pakistan

سوال # 156671

کیا میاں بیوی ایک ساتھ نہا سکتے ہیں؟ کیا اس دوران مباشرت کی جا سکتی ہے ؟

Published on: Dec 14, 2017

جواب # 156671

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:284-232/N=3/1439



(۱): جی ہاں! میاں بیوی دونوں ایک ساتھ نہاسکتے ہیں، حضرت عائشہ صدیقہ فرماتی ہیں کہ میں اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ ایک ہی برتن سے غسل کیا کرتی تھی، آپ مجھ پر سبقت فرماتے تو میں کہتی: مجھے بھی دیجئے، مجھے بھی دیجئے۔



عن عائشةقالت: کنت أغتسل أنا ورسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم من إناء بینی وبینہ واحد فیبادرني حتی أقول: دع لي دع لي، قالت: وھما جنبان، وفي روایة أخری: کنت أغتسل أنا ورسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم من إناء واحد تختلف أیدینا فیہ من الجنابة، رواہ مسلم (۱: ۱۴۸) (إعلاء السنن، ۱:۱۲۸، ط: إدارة القرآن والعلوم الإسلامیة کراتشي)۔



(۲): جی ہاں! میاں بیوی غسل کے دوران مباشرت کرسکتے ہیں، اس میں شرعاً کچھ حرج نہیں ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات