عبادات - طہارت

Maharashtra

سوال # 146498

میرے ناناجان کی عمر تقریباً 70 سال ہے ․کمزوری کی وجہ سے ان کی ریح اکثر خارج ہوجایا کرتی ہے ... نماز کے وقت تک وضو باقی رہ گیا تو اسی وضو سے دوسری نماز کی نیت باندھ لیتے ہیں اور نیت باندھتے ہی ریح خارج ہوجائے تو کیا کریں.. جبکہ وہ وضو سابقہ نماز کے لیے بنایا گیا تھا؟رہبری فرمائیں عین گزارش۔ خیرا۔

Published on: Dec 17, 2016

جواب # 146498

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 213-158/D=3/1438



 



مذکورہ صورت میں وضو ٹوٹ جانے کی وجہ سے آپ کے نانا کو دوبارہ وضو کرکے نماز کا اعادہ کرنا پڑے گا۔ ومنہا (نواقض الوضوء): ما یخرج من السبیلین من البول والغائط والریح الخارجة من الدبر۔ (ہندیة: ۱/۶۰) یعنی ریح خارج ہونے کے بعد فوراً نماز توڑ دیں اور تازہ وضو کرکے نماز پھر سے پڑھیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات