India

سوال # 60991

میں نے ایک بینک کے شیئرز میں پیسے لگائے تھے جس میں مجھے منافع ملا، میں یہ پوچھنا چاہتاہوں کہ یہ ربا تو نہیں ہے کیوں کہ بینک لون اور سودی لین دین کرتاہے اور یہ منافع اس سود سے ہو ؟ براہ کرم، جواب دیں۔

Published on: Sep 9, 2015

جواب # 60991

بسم الله الرحمن الرحيم

Fatwa ID: 681-681/Sd=11/1436-U

بینک کے شیرز سے ملنے والا نفع عموماً سود ہی کے ذریعے حاصل کیا جاتا ہے اسی لیے سودی بینک کے شیئرز خریدنا ناجائز ہے، لہٰذا آپ کے لیے سود سے حاصل شدہ منافع کا استعمال جائز نہیں ہے، ہاں اگر بینک کسی جائز کاروبار میں رقم لگاکر جائز طریقے پر نفع حاصل کرتا ہے تو اس کی تفصیل لکھ کر دوبارہ سوال کریں۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات