Pakistan

سوال # 5595

کیا اسلام میں اسٹاک ایکسچنج کا کاروبار کرنا جائز ہے یا ناجائز،یعنی اسٹاک ایکسچنج کے حصص کا خریدنا اور بیچنا؟ برائے کرم تفصیلی جواب سے نوازیں۔

Published on: Jun 3, 2008

جواب # 5595

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 185=185/ م


 


اسٹاک مارکیٹ سے شیئرز (حصص) کی خرید و فروخت چند شرائط کے ساتھ جائز ہے


(۱)جس کمپنی کا شیئرز خریدنا ہے اس کا اصل کاروبار حلال ہو۔


(۲) اس کمپنی کے کچھ اثاثے (فکسڈ ایسٹس) وجود میں آچکے ہوں، رقم صرف نقد کی شکل میں نہ ہو۔


(۳) اگر کمپنی سودی لین دین کرتی ہے تو اس کے خلاف آواز اٹھائی جائے۔


(۴) تقسیم منافع کے وقت، نفع کا جتنا حصہ سودی ڈپوزٹ سے حاصل ہوا ہو، اس کو بلانیت ثواب صدقہ کردے۔


(۵) شیئرز کی خرید و فروخت کا مقصد محض آپس کا ڈفرنس برابر کرنا نہ ہو جس میں قبضہ بھی نہیں ہوتا بلکہ مقصد اس کمپنی کا حصہ دار بننا اور اس کا سالانہ منافع حاصل کرنا ہو۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات