India

سوال # 161069

میرا سوال ہے کہ شیئر مارکیٹ میں کمپنی کا شیئر میں میں نے ۱۰۰/ روپئے میں خریدا ہے جو حلال میل کی کمپنی ہے اور اثاثے بھی ہیں، دو دن بعد اس شیئر کی قیمت ۱۱۰/ روپئے ہوگئی تو اس کو میں نے بیچ دیا، تو یہ منافعہ میرے لئے حلال ہوگا؟

Published on: May 10, 2018

جواب # 161069

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:886-748/N=8/1439



 اگر۲/ دن میں شیئر کی ڈیلیوری ہوجائے اور آپ اس کے بعد اسے فروخت کریں تو حاصل شدہ منافع حلال ہوں گے۔ اور اگر ڈیلیوری سے پہلے فروخت کیا تو بیع فاسد ہوئی اور حاصل شدہ نفع بلانیت ثواب غربا ومساکین کو دینا ہوگا۔



وفی المواھب: وفسد بیع المنقول قبل قبضہ (الدر المختار مع رد المحتار، کتاب البیوع، باب المرابحة والتولیة، ۷:۳۷۱، ط: مکتبة زکریا دیوبند)، لا یطیب للمشتري ما ربح في بیع یتعین بالتعیین بأن باعہ بأزید لتعلق العقد بعینہ فتمکن الخبث فی الربح فیتصدق بہ (المصدر السابق، ص: ۲۹۹)، قولہ: ”في بیع یتعین بالتعیین“:أراد بالبیع المبیع وأشار بقولہ: ”یتعین بالتعیین“ کالعبد مثلاً الخ (رد المحتار) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات