عبادات - صوم (روزہ )

Hyderabad india

سوال # 69702

کیا اجرت تراویح جائزہے ؟ خواہ چندہ کرکے دیا جاے یا انفرادی (چونکہ مفتی سعید پالنپوری انفرادی کے جواز کے قایل ہیں۔ اس سلسلہ میں دارالافتاء کی کیا رائے ہے ؟) اگر بالکلیہ ناجائزہو تو کیا کسی دوسرے محلہ میں تراویح پڑھاکر پٹرول کی رقم کے عنوان سے کچھ لیا جاسکتا ہے ؟ نیز کس حد تک گنجایش ہے ؟( چندہ کرکے ہو یا انفرادی) کیا پٹرول کی رقم کو اصل اور حبس وقت کو تابع بنا کر اجرت لی جاسکتی ہے ؟

Published on: Oct 1, 2016

جواب # 69702

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 1070-1145/M=12/1437



تراویح کی اجرت کا لین دین ناجائز ہے اس بارے میں دارالافتاء دارالعلوم دیوبند سے جاری کردہ ایک مفصل فتویٰ رسالہ کی شکل میں بنام ”معاوضہ علی التراویح کی شرعی حیثیت“ دارالعلوم دیوبند سے شائع ہوچکا ہے اس میں تفصیل موجود ہے اسے منگوا کر مطالعہ فرمالیں۔

مفتی سعید پالن پوری جواز کے قائل ہیں؟ کیا یہ حقیقت اس کو خود ان ہی سے معلوم کرلیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات