عبادات - صوم (روزہ )

India

سوال # 2747

اگرامام تراویح میں دو رکعات کے بجائے تین رکعات پڑھا دیں تواس کا کیا مسئلہ ہے ؟ جبکہ انہیں سجد ہ سہو بھی یاد رہاتوکیا نماز ہوجائے گی؟ اگر ہوگی تو کیا اسے دورکعات مانی جائیں گی؟ براہ کرم، حدیث کی روشنی میں جواب دیں۔

Published on: Feb 13, 2008

جواب # 2747

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 73/ ل= 73/ ل


 


اگر امام صاحب نے دوسری رکعت پر قعدہ نہیں کیا تھا تو ایسی صورت میں نماز کا اعادہ ضروری ہے اور تینوں رکعتوں میں پڑھے ہوئے قرآن کا بھی اعادہ ضروری ہوگا: لو صلی التطوع ثلاثاً أو ستًا أو ثمانیاً بقعدة واحدة فالأصح أنہ یفسد استحساناً وقیاساً. (شامي: ج۲ ص۴۹۶، ط. زکریادیوبند)


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات