عبادات - صوم (روزہ )

Pakistan

سوال # 2736

کیا اگرشرعی مسافرتراویح کی نماز نہ پڑھے تو اس پر گناہ ہوگا؟ (۲) ابن حزم کے بارے میں علمائے کرام کی کیارائے ہے؟ کیا وہ غیر مقلد تھے؟

Published on: Feb 19, 2008

جواب # 2736

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 183/ د= 155/ د


 


مسافر شرعی تراویح کی نماز نہ پڑھے تو اس پر گناہ نہیں ہے، لیکن اگر اطمینان و سکون سے کہیں ٹھہرا ہوا ہے تو نماز پڑھ لینا افضل ہے اور رمضان کے اجیر کثیر سے محروم ہونا، اچہا نہیں ہے۔ قال في الدر اویأتي المسافر بالسنن إن کان في حال أمن وقرار وإلا لا (شامي: ج۱ ص۵۸۵)


(۲) حافظ ذہبی نے فرمایا کہابن حزم شافعی تھے پھر نصوص کے ظاہر پر عمل کرنے کا طریقہ اختیار کرلیا اور قیاس کو بالکلیہ ترک کردیا، (تذکرة الحفاظ) حافظ ابن حجر کہتے ہیں کہ پہلے شافعی مذہب کے ماننے والے تھے پھر اہل ظاہر کا طریقہ اختیار کرلیا اور اس میں تعصب کی حد کو پہنچ گئے اور اپنے مسلک کی تائید میں کتابیں لکھیں اور اپنے مخالفین پر رد بھی کیا (لسان المیزان) حاصل یہ کہ یہ غیرمقلد ہیں اور جمہور کے مسلک سے ہٹے ہوئے ہیں کیونکہ قیاس کی حجیت قرآن وحدیث اور آثار صحابہ سے ثابت ہے، اور جمہور قیاس کے حجت شرعیہ ہونے کے قائل ہیں یہ اس کے مخالف ہیں۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات