عبادات - صوم (روزہ )

India

سوال # 162477

عرض ہے کہ اگر کوئی شخص رمضان میں سفر کر رہا ہے اور عشاء کا وقت ہو گیا اور اس نے عشاء پڑھ لی حالت سفر میں اور پھر عشاء کا وقت پورا ہونے سے پہلے اپنے مقام پر پہنچ گیا تو کیا اس کو تراویح پڑھنی پڑھے گی (جیسے میں بمبئی سے دوپہر کو ۲۱ بجے ٹرین میں بیٹھا اور رات ۱۱:۰۳ منت پر اتر گیا اور اس دوران میں عشاء پڑھ لی ہے تو کیامجھ پر تراویح لازم ہوگی)

Published on: Jul 10, 2018

جواب # 162477

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1154-1086/M=10/1439



صورت مسئولہ میں جب کہ وہ شخص عشاء کا وقت باقی رہتے ہوئے سفر سے لوٹ آیا اور مقیم ہوگیا تو اسے اپنے مقام پر پہنچ کر تراویح پڑھ لینی چاہیے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات