عبادات - صوم (روزہ )

Pakistan

سوال # 152720

اگر کوئی شخص ٹھیک ٹھاک ہو ، بیمار نہ ہو،نہ سفر میں ہو تووہ کیا پورے رمضان کے روزوں کا فدیہ دے سکتاہے ؟یعنی وہ ایک وقت میں 1800لوگوں کو کھانا کھلائے گااور گناہ سے اس کو نجات مل جائے گی۔اور اگر وہ یہ ہمیشہ کررہاہو تو کیا اسلام میں اس کی اجازت ہے؟
براہ کرم، تفصیل سے جواب دیں۔

Published on: Aug 8, 2017

جواب # 152720

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 1171-110/sd=11/1438



اگر کوئی شخص بیمار نہیں ہے ،تواُس کے لیے روزے ہی رکھنا ضروری ہیں، روزے کے بدلے اُس کا فدیہ ادا کرنا صحیح نہیں ہے ، شریعت میں اِس کی اجازت نہیں ہے ، اگر کوئی شخص صحت و تندرستی کے باوجود روزے رکھنے کے بجائے مسلسل فدیہ ادا کرتا ہے ، تو وہ گنہگار ہوگا۔



-------------------------------



اٹھارہ سو لوگوں کو کھانا کھلانے کی بات واضح نہیں ہے، سائل کو چاہیے کہ بات واضح کرکے غلط فہمی دور کرلے۔ (د)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات