عبادات - صوم (روزہ )

India

سوال # 152284

ماہ رمضان میں روزہ کی حالت میں مشت زنی کرنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے تو قضا ہے کیوں ؟ کفارہ کیوں نہیں؟ جب کہ جان بوجھ کر روزہ توڑ دینے سے کفارہ لازم آتا ہے۔
جواب مطلوب ہے۔

Published on: Jul 19, 2017

جواب # 152284

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 995-951/sd=10/1438



کفارہ کمال جنایت پر واجب ہوتا ہے ، مشت زنی کرنے میں کمال جنایت نہیں پائی جاتی، اِس لیے اس میں کفارہ واجب نہیں ہوتا۔ یستفاد :قال الحصکفی: ولو أنزل بقبلة أو لمس فعلیہ القضاء دون الکفارة " لوجود معنی الجماع ووجود المنافی صورة أو معنی یکفی لإیجاب القضاء احتیاطا، أما الکفارة فتفتقر إلی کمال الجنایة لأنہا تندرء بالشبہات کالحدود۔( الہدایة : ۱۲۱/۱، کتاب الصوم، ط:دار احیاء التراث العربی، بیروت )



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات