عبادات - صوم (روزہ )

Pakistan

سوال # 152240

یہاں پاکستان کے ایک صوبہ kpk والوں کی الگ کمیٹی ہے جو چاند دیکھ کر روزہ، عید کا اعلان کرتی ہے ۔جبکہ کچھ علاقے اس کمیٹی کے فیصلے کو نہیں مانتے ایک علاقہ میں باقاعدہ رویت ہلال پر روزہ ہوا، وہاں کے ایک رہائشی نے روزہ رکھا اور صبح ایک قریبی گاؤں چلاگیاجہاں کے لوگ پاکستان رؤیت ہلال کمیٹی کے ساتھ روزہ رکھتے ہیں اس دن وہاں روزہ نہیں تھا، لوگ کھا پی رہے تھے ، اس بندہ نے بھی کھایا اور روزہ توڑا تو کیا اس پر کفارہ واجب ہوگا؟ یہ سفر شرعی مقدار سے کم ہے تقریبا 8یا10کلومیٹر تھا۔

Published on: Jul 26, 2017

جواب # 152240

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 1024-1001/B=11/1438



حدیث شریف میں آیا ہے ”صوموا لروٴیتہ وأفطروا لروٴیتہ“ یعنی چاند دیکھ کر روزہ رکھو اور چاند دیکھ کر عید مناوٴ۔ اگر آپ کے صوبہ کی روٴیت ہلال کمیٹی نے چاند دیکھ کر روٴیت کا فیصلہ کیا اور روزہ رکھنے کا حکم دیا تو یہ بالکل صحیح فیصلہ کیا اور روزہ رکھنے والوں کا روزہ صحیح ہوا۔ دوسری جگہ یعنی دوسرے صوبہ میں خواہ چاند نہ ہوا تو بھی اپنے صوبہ کی کمیٹی کا فیصلہ صحیح اور نافذ العمل ہوگا۔ پہلے صوبہ والے نے دوسرے صوبہ میں جاکر روزہ توڑدیا تو اس پر صرف قضا واجب ہوگی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات