عبادات - صوم (روزہ )

Bangladesh

سوال # 12918



ایک یا اس سے زیادہ رمضان کے تمام روزہ اگر
قصدا ترک کریں تو صرف ایک روزہ کا کفارہ دیا جائے؟ یا کہ ہروزہ کی کفارہ ضروری ہے؟



Published on: May 24, 2009

جواب # 12918

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی: 957=811/د



 



رمضان کا روزہ بلا عذر چھوڑنا سخت گناہ کی
بات ہے، اس سے توبہ واستغفار کرکے ان روزوں کی قضا رکھنا فرض ہے، اگر ضعف ولاغری کی
ایسی عمر کو پہنچ چکا ہے کہ اب بظاہر روزہ رکھنے کی استطاعت نہیں ہے، اور نہ ہی
آئندہ ہونے کی امید ہے تو ایسی شکل میں قضا شدہ روزوں کا فدیہ ادا کرنا فرض ہوجاتا
ہے، ایک روزہ کی طرف سے ایک کلو چھ سو تینتیس گرام (1.633
kg)گیہوں کے حساب سے جوڑکر فدیہ ادا کردیا جائے۔ اس کے علاوہ کوئی
کفارہ واجب نہیں ہوتا۔



ماہ رمضان کا روزہ رکھنے کے بعد جان بوجھ
کر اسے توڑدینے سے کفارہ واجب ہوتا ہے، اگر ایسے کفارہ کے بارے میں سوا ل کرنا
مقصود ہے تو اسے پوری وضاحت سے لکھ کر دوبارہ معلوم کریں۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات