عبادات - صوم (روزہ )

Pakistan

سوال # 10083

مجھ سے رمضان میں رات کے وقت مشت زنی ہوگئی تو اب میں کیا کروں؟ روزے رکھوں یا کیا کروں؟ اور حضرت مجھ سے مشت زنی بہت ہوتی ہے جب کہ میں پنجاب یونیورسٹی ہوسٹل نمبر ۷/ کی امامت بھی کرواتا ہوں اور تبلیغی جماعت کا امیر بھی ہوں۔ برائے کرم تفصیل سے جواب دیں بہت پریشان ہوں۔

Published on: Jan 19, 2009

جواب # 10083

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 46=46/ م


 


روزے کا وقت، سحری کا وقت ختم ہوتے ہی شروع ہوتا ہے، پس اگر آپ سے رمضان کی رات میں سحر کا وقت ختم ہونے سے پہلے مشت زنی ہوئی، تو روزے کی قضاء واجب نہیں، البتہ مشت زنی کا گناہ ہوا اور اس کی عادت تو ناجائز وحرام ہونے کے ساتھ صحت کے لیے بھی انتہائی مضر ہے، پس اس قبیح فعل سے توبہ واستغفار لازم ہے، اگر شادی نہ ہوئی ہو تو جلد از جلد شادی کرلیں، روزہ بھی رکھا کریں۔ روزہ کی حالت میں مشت زنی کی وجہ سے روزہ فاسد ہوجاتا ہے اور صرف قضاء لازم ہوتی ہے، ممکن ہوسکے تو کسی شیخ متبع سنت اور صاحب نسبت بزرگ سے بیعت ہوجائیں۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات