عبادات - صلاة (نماز)

United Kingdom

سوال # 9908

نماز میں تکبیر تحریمہ کے لیے کب ہاتھ اٹھایا جائے گا؟ کیا انگوٹھا یا شہادت کی انگلی کا کان کی لو سے چھونا سنت ہے؟(۲)اوپر مذکور سوال کا حدیث سے کیا حوالہ ہے؟

Published on: Jan 15, 2009

جواب # 9908

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 20/20/ ب


 


تکبیر تحریمہ کہتے ہوئے اسی کے ساتھ ہاتھ بھی اٹھایا جائے، کان کی لَوْ کو اپنے انگوٹھے یا شہادت کی انگلی سے چھونا سنت نہیں ہے۔ بلکہ اپنے انگوٹھے کو کان کی لو تک اٹھانا یعنی اس کے مقابل کرنا سنت ہے: حَتی یُحَاذِیَ أذُنَیْہِ، اوردوسری حدیث میں: حتی یحاذی منکبیہ، پہلی حدیث میں ہاتھ کو کان کی لو کے مقابل اٹھانے کا ذکر ہے، اور دوسری حدیث میں دونوں ہاتھ اپنے کندھوں کے مقابل اٹھانے کا ذکر ہے، ابوداود، ترمذی، نسائی، ابن ماجہ، طحاوی وغیرہ سب ہی کتابوں میں یہ حدیثیں ملیں گی۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات