عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 17685



نماز
کے متعلق کچھ مسائل دریافت کرنے ہیں۔ (
۱)جماعت میں پہلی یا دوسری رکعت کے
بعد شامل ہوئے تو امام کے ساتھ قعدہ اخیرہ میں صرف التحیات پڑھیں گے یا درود و
ماثورہ بھی پڑھیں گے؟ (
۲)ظہر
کی چار سنتیں اگر چھوٹ جائیں یا مستقل چھوٹ رہی ہوں تو ان کو فرض کے بعد ادا کر
سکتے ہیں؟ (
۳)ہماری
مسجد میں ایک صف میں پچپن سے ساٹھ آدمی آتے ہیں اندر کے حصہ میں چھ صفیں ہیں باہر
کے حصہ میں چار صفیں ہیں ۔ برائے کرم واضح کریں کہ اتنی بڑی مسجد میں نمازی کے آگے
سے گزرنے کا شرعی مسئلہ کیا ہے؟



Published on: Nov 25, 2009

جواب # 17685

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی(م):1753=1753-12/1430



 



صرف
التحیات اس قدر ٹھہر ٹھہر کر پڑھیں کہ امام کے سلام پھیرنے تک آپ کی التحیات مکمل
ہوجائے: وأما المسبوق فیترسل لیفرغ عند سلام إمامہ (درمختار)



(۲) فرض کے بعد ادا کرسکتے ہیں،
لیکن ظہر سے پہلے مستقل چھوٹنے نہ پائے اس کا خیال رکھیں۔



(۳) مسجد کی لمبائی ناپ لیں،
اگر لمبائی چالیس گز (شرعی) ہے تو وہ مسجد کبیر ہے، اس میں دو تین صف چھوڑکر نمازی
کے آگے سے گزرسکتے ہیں ورنہ نہیں۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات