عبادات - صلاة (نماز)

Pakistan

سوال # 171302

حضرت کیا مؤذن کی اجازت کے بغیر اذان یا اقامت پڑھ سکتے ہیں حتیٰ کہ اذان کا ابھی وقت بھی نہ ہوا ہو؟

Published on: Jul 11, 2019

جواب # 171302

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:881-747/sd=11/1440



وقت سے پہلے اذان صحیح نہیں ہوتی اور اس کا اعتبار نہیں ہوتااورا گرمسجد میں موذن مقرر ہے، تو اُس کی اجازت اور رضامندی کے بغیر اس کی موجودگی میں کسی دوسرے شخص کا اذان و اقامت کہنا مکروہ ہے، اس میں نظم میں بھی خلل واقع ہوتا ہے۔



قال الحصکفی :(أقام غیر من أذن بغیبتہ) أی الموٴذن (لا یکرہ مطلقاً)، وإن بحضورہ کرہ إن لحقہ وحشة“ ( الدر المختار ) وان أذن رجل و أقام آخر ان غاب الاول جاز من غیر کراھة وان کان حاضرا و یلحقہ الوحشة باقامة غیرہ یکرہ وان رضی بہ لا یکرہ عندنا کذا فی المحیط( الفتاوی الہندیة )۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات