عبادات - صلاة (نماز)

Pakistan

سوال # 170830

میرا سوال ہے کہ ظہر کے چار رکعت فرض پڑھتے وقت اگر غلطی سے 3 یا 5 رکعت پڑ کے سجدہ سہو کیا جا تو نماز ہوگئی؟
سوال نمبر 2 جماعت کی نماز ہو مقتدی دیر سے آئے مطلب وہ تیسری رکعت میں شامل ہو تو وہ امام کے سلام کے بعد جو دو کعت ہے اس میں وہ سورة پڑھے گا یا نہیں؟ براہ کرم، جواب دیں۔

Published on: Jul 13, 2019

جواب # 170830

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:801-728/sd=11/1440



(۱) چار رکعت والی نماز میں اگر تین ہی رکعات پڑھیں، تو فرض اداء نہیں ہوگا، خواہ تیسری رکعت کے آخر میں سجدہ سہو کرلیا ہو اور چوتھی رکعت میں قعدہ کرکے غلطی سے پانچویں رکعت کے لیے کھڑا ہوا، تو فرض اداء ہوگئے؛ لیکن پانچویں رکعت کے سجدہ سے پہلے پہلے واپس آجانا چاہیے اور سجدہ سہو کرکے سلام پھیردینا چاہیے اور اگر سجدہ بھی کرلیا، تو ایک رکعت اور ملا لینا چاہیے تاکہ دو رکعات نفل ہوجائیں اور اگر چوتھی رکعت میں قعدہ کیے بغیر پانچویں رکعت کے لیے کھڑا ہوا، تو سجدہ سے پہلے واپس آکر اگر سجدہ سہو کرکے سلام پھیر دیا، تو فرض اداء ہوجائے گااور اگر پانچویں رکعت کا سجدہ کرلیا، تو اب فرض باطل ہوجائے گا اورفرض کا اعادہ لازم ہوگا۔



(۲)جی ہاں ! دونوں چھوٹی ہوئی رکعت میں سورہ فاتحہ کے ساتھ سورت بھی پڑھے گا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات