عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 170424

کیا کھلے بازو کی حالت میں نماز پڑھنا مکروہ ہے؟ مدلل جواب مرحمت فرمائیں۔

Published on: May 17, 2019

جواب # 170424

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:911-746/sn=9/1440



جی ہاں! کھلے بازو مثلا آستین اوپر تک چڑھائے ہوئے نماز پرھنا مکروہ ہے۔



(و)کرہ (کفہ) أی رفعہ ولولتراب کمشمرکم أوذیل... (قولہ کمشمرکم أو ذیل) أی کما لودخل فی الصلاة وہو مشمر کمہ أو ذیلہ، وأشار بذلک إلی أن الکراہة لا تختص بالکف وہو فی الصلاة کما أفادہ فی شرح المنیة، لکن قال فی القنیة: واختلف فیمن صلی وقد شمر کمیہ لعمل کان یعملہ قبل الصلاة أو ہیئتہ ذلک اہ ومثلہ ما لوشمر للوضوء ثم عجل لإدراک الرکعة مع الإمام. وإذا دخل فی الصلاة کذلک وقلنا بالکراہة فہل الأفضل إرخاء کمیہ فیہا بعمل قلیل أو ترکہما؟ لم أرہ: والأظہر الأول...إلخ (الدر المختار وحاشیة ابن عابدین2/406،ط: زکریا)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات