عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 170171

دو شخص جماعت سے نماز پڑھ رہے ہیں اور دونوں ایک لائن میں کھڑے ہیں ، لیکن جب کوئی تیسری شخص نماز میں شامل ہوجائے تو کیا امام کو آگے بڑھنا چاہئے؟یا مقتدیوں کو پیچھے ہٹنا چاہئے؟براہ کرم، طریقہ بتائیں۔

Published on: May 21, 2019

جواب # 170171

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:947-859/L=9/1440



 صورتِ مسئولہ میں دونوں صورت جائز ہے،خواہ امام آگے بڑھ جائے یا مقتدی پیچھے ہوجائے اور یہ بھی درست ہے کہ آنے والا شخص مقتدی کو پیچھے کھینچ لے بشرطیکہ مقتدی کی نماز کے فساد کا اندیشہ نہ ہو۔



(تتمة):إذا اقتدی بإمام فجاء آخر یتقدم الإمام موضع سجودہ کذا فی مختارات النوازل. وفی القہستانی عن الجلابی أن المقتدی یتأخر عن الیمین إلی خلف إذا جاء آخر. اہ. وفی الفتح: ولو اقتدی واحد بآخر فجاء ثالث یجذب المقتدی بعد التکبیر ولو جذبہ قبل التکبیر لا یضرہ، وقیل یتقدم الإمام اہ ومقتضاہ أن الثالث یقتدی متأخرا ومقتضی القول بتقدم الإمام أنہ یقوم بجنب المقتدی الأول. والذی یظہر أنہ ینبغی للمقتدی التأخر إذا جاء ثالث فإن تأخر وإلا جذبہ الثالث إن لم یخش إفساد صلاتہ... (رد المحتار: ۲/۳۰۹، کتاب الصلاة، باب الإمامة، ط: زکریا)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات