عبادات - صلاة (نماز)

india

سوال # 170044

کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیان شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ اگر کوئی پیشاب کو تھیلی میں پیک کرکے جیب میں رکھ کر نماز ادا کرے تو کیا نماز ہوجائیگی؟

Published on: May 13, 2019

جواب # 170044

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:927-812/L=9/1440



پیشاب کی تھیلی کو پیک کرکے جیب میں رکھ کر نماز ادا کرنے کی صورت میں نماز ادا نہ ہوگی۔



إذا صلی وفی کمہ بیضة مذرة قد حال محہا دما جازت صلاتہ وکذا البیضة التی فیہا فرخ میت. کذا فی فتاوی قاضی خان.فی النصاب رجل صلی وفی کمہ قارورة فیہا بول لا تجوز الصلاة سواء کانت ممتلئة أو لم تکن؛ لأن ہذا لیس فی مظانہ ومعدنہ بخلاف البیضة المذرة؛ لأنہ فی معدنہ ومظانہ وعلیہ الفتوی. کذا فی المضمرات.(الفتاوی الہندیة 1/ 62،ط:زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات