عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 166093

اگر ایک شخص فجر کی نماز میں قرأت مسنونہ سے ہٹ کر اپنے یاد کیلئے روز آنا قرآن پارہ 1 سے شروع کیا ہے ۔ کیا قرآن وحدیث یا کسی صحابی سے ثابت ہے ؟اگر ثابت ہے تو قرأت مسنونہ چھوٹ جاتی ہے ۔اس مسٴلہ پر قرآن وحدیث کی روشنی میں جواب مرحمت فرمائیں۔

Published on: Oct 25, 2018

جواب # 166093

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 168-144/M=2/1440



اپنی یاد کو باقی رکھنے کے لئے روزانہ نفلوں میں پڑھنے کا یا خارج نماز تلاوت کا اہتمام رکھنا چاہئے، فجر سے پہلے یا فجر کی نماز کے بعد یا کسی بھی فارغ وقت میں روزانہ ایک دو یا تین پارے پڑھنے کا معمول بنایا جاسکتا ہے اور فجر کی فرض نماز میں قرأت مسنونہ پڑھنا بہتر ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات