عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 162350

کسی شخص کو مسجد میں اذان دینے کے لئے لگایا گیا اور وہ اذان دیتا ہے پر اس کے الفاظ صحیح نہیں ہیں، کیا اس کا اذان دینا جائز ہے؟ اور جان کر بھی لوگ اس کو نہیں ہٹائے، اس گنا ہ کا ذمہ دار کون ہوگا؟

Published on: Jun 14, 2018

جواب # 162350

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1070-913/D=9/1439



موٴذن ایسے شخص کو مقرر کرنا چاہئے جو کلمات اذان کا صحیح تلفظ کرسکے دیندار اور اوقات نماز سے واقف ہو۔ صورت مسئولہ میں جسے اذان دینے کے لئے مقرر کیا گیا ہے اسے پابند کریں کہ کسی واقف کار (قاری ، حافظ، عالم) سے کلمات اذان کی مشق کرلے۔ اگر تصحیح کرلیتا ہے تو ٹھیک ہے اسے اس خدمت پر برقرار کررکھیں اور اگر تصحیح نہیں کرتا اور غلطی واضح ہے تو پھر دوسرے موٴذن کا انتظام کرلیں ۔ یہ سب ذمہ داری انتظامی کمیٹی یا اہل محلہ کی ہے۔ کوتاہی پر وہی گنہگار ہوں گے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات