عبادات - صلاة (نماز)

Pakistan

سوال # 161728

گاؤں کی مسجد دو منزلہ ہے اپریل سے اگست تک صرف ظہر اور عصر کی نمازِ باجماعت اوپر والی منزل میں پڑھتے ہیں جبکہ نچلی منزل خالی ہوتی ہے جہاں فجر مغرب عشاء اور جمعہ پڑھتے ہیں جبکہ بالائی منزل کی کھڑکیوں سے گاؤں کے گھروں پر بھی نظر پڑ جاتی ہے کیا اس طرح نماز باجماعت پڑھنا جائز ہے مہربانی فرما کر اسی سلسلے میں قرآن وسنت کی رو سے رہنمائی فرمائیں اللہ آپ کو جزائے خیر عطا کرے ۔

Published on: Jun 4, 2018

جواب # 161728

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1052-969/M=9/1439



ظہر اور عصر کی نماز اوپر کی منزل میں اور بقیہ تین اوقات (فجر، مغرب اور عشاء) کی نماز نیچے کی منزل میں ادا کرسکتے ہیں لیکن بہتر یہی ہے کہ ساری نمازیں نیچے کی منزل میں ادا کریں اگر نیچے کی جگہ پر ہوجائے پھر اوپر کی منزل میں صف لگے تو مضائقہ نہیں، اور جب اوپر کی منزل میں لوگ ہوں تو اس وقت اوپر کی کھڑکیوں کو بند کردیا کریں تاکہ نمازیوں کی نظر باہر نہ جائے نیز بے پردگی نہ ہو۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات