عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 147221

(۱) فرض نماز کی چار رکعت میں امام تین رکعت پر بیٹھ گئے مقتدی نے لقمہ دیا تو کھڑے ہو گئے چوتھی رکعت پوری کی سجدہ سہو نہیں کیا۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ نماز ہو جائے گی؟
(۲) یا تیسری رکعت پر بیٹھ گئے تو تشہد (التحیات) پڑھ کر کھڑے ہوتے، چوتھی رکعت پوری کرتے اور سجدہ سہو کرکے نماز مکمل کرتے۔
برائے کرم رہنمائی کریں اور بتائیں کہ صحیح طریقہ کیا ہے؟

Published on: Jan 5, 2017

جواب # 147221

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 321-269/H=4/1438



 



(۱) اگر بیٹھتے ہی مقتدی نے لقمہ دیا اور فوراً کھڑے ہوگئے کہ تین مرتبہ سبحان اللہ سبحان اللہ سبحان اللہ کی مقدار تاخیر نہ ہوئی تھی تو سجدہ واجب نہ ہوا تھا، اس لیے بغیر سجدہ سہو کیے نماز درست ہوگئی۔



(۲) بھول سے اگر تیسری رکعت پر بیٹھ جائے تو یہ حکم نہیں کہ تشہد پڑھ کے کھڑے ہوکر چوتھی رکعت پوری کی جائے اور پھر سجدہٴ سہو کیا جائے بلکہ حکم یہ ہے کہ یاد آنے پر فوراً کھڑا ہوجائے پھر اگر تین دفعہ سبحان اللہ کی مقدار تاخیر ہوئی ہو تو چوتھی رکعت میں بعد تشہد سجدہٴ سہو کرکے نماز پوری کرے اوراگر اس سے کم تاخیر ہوئی ہو تو فوراً کھڑا ہوجائے اور بغیر سجدہٴ سہو نماز پوری کرلے، ہکذا فی حاشیة الطحطاوی ص۴۷۴ (باب سجود السہو)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات