عبادات - صلاة (نماز)

India

سوال # 1404

میں نماز تراویح کے سلسلے میں جاننا چاہتا ہوں کہ یہ بیس رکعت ہے یا آٹھ رکعت؟ باحوالہ جواب دیں۔

Published on: Aug 30, 2007

جواب # 1404

بسم الله الرحمن الرحيم

(فتوى:  389/ل = 389/ل)


 

تراویح کی نماز بیس رکعات سنت ہے، حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے بیس رکعات تراویح کا ثبوت ہے۔ چنانچہ مصنف ابن ابی شیبہ، طبرانی اور بیہقی میں ابن عباس -رضی اللہ عنہ- کی روایت موجود ہے، أحادیث العشرین رکعة۔ روی بن أبي شیبة في مصنفہ والطبراني في معجمہ وعنہ البیھقي من حدیث إبراھیم بن عثمان أبي شعبة عن الحکم عن مقسم عن ابن عباس -رضي اللہ عنہ- أن رسول اللّہ صلی اللہ علیہ وسلم کان یصلي في رمضان عشرین رکعة سوی الوتر (نصب الرایة: ج۲ ص۱۵۳) اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ کے زمانہ میں لوگ بیس رکعات تراویح اور وتر تین رکعات کل تیئس رکعات پڑھا کرتے تھے اورآج تک اسی پر شرقاً و غرباً امت کاعمل ہے، عن یزید بن رومان قال: کان الناس یقومون في زمن عمر بن الخطاب رضي اللہ عنہ بثلاث و عشرین رکعة (رواہ المالک في الموطا:۴۰) اور شامی میں ہے: وھي عشرون رکعة ھو قول الجمھور وعلیہ عمل الناس شرقاً و غرباً (شامي: ج۲ ص۴۹۵، ط:زکریا دیوبند)

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات