عبادات - صلاة (نماز)

Pakistan

سوال # 10374

کیا فرض نماز میں امام کی قرأت میں بھولنے پر اس کو بتایا جاسکتا ہے؟ امام صاحب کو ایک شخص نے بتایا تو وہ کہتے ہیں کہ فرض نماز میں قرأت میں تھوڑی بہت غلطی ہوجائے جس سے معنی نہ بدلیں تو بتانا نہیں چاہیے ہاں فرض کے علاوہ کو ئی نماز ہو تو اس میں ذرا سی غلطی پر بھی بتایا جاسکتا ہے؟

Published on: Feb 17, 2009

جواب # 10374

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 105=112/ ل


 


جی ہاں! اگر فرض نماز میں امام سے قرأت میں غلطی ہوجائے تو اسے لقمہ دیا جاسکتا ہے: لما صرحوا بہ في فتح المصلی علی إمامہ بأنھا لا تفسد علی الصحیح سواء قرأ الإمام ما تجوز بہ الصلاة أولا (شامي: ۲/۳۵۷) البتہ اگر ایسی غلطی نہیں ہے جو خطأ فاحش ہو اور جس سے نماز فاسد ہوجاتی ہے تو بہتر یہ ہے کہ لقمہ نہ دیا جائے۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات