عبادات - صلاة (نماز)

Saudi Arabia

سوال # 10240

عورتوں کی نماز مردوں سے مختلف ہے اس کا جواب حدیث کی روشنی میں بتائیں؟ حدیث کہاں سے لی گئی ہے سب تفصیل سے بتائیں؟ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی ازواج مطہرات نے کیسے نماز پڑھی؟

Published on: Feb 2, 2009

جواب # 10240

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 140=140/ م


 


(۱) مرد اور عورت کی نماز کے درمیان چودہ سے زائد فرق ہیں، چند فرق احادیث کی روشنی میں ملاحظہ ہو:


۱- خواتین نماز شروع کرنے کے وقت دونوں کندھوں تک ہاتھ اٹھائیں، مرد حضرات کانوں تک اٹھائیں: عن أم الدرداء أنھا ترفع کفیھا حذو منکبیھا حین تفتح الصلاة (مصنف ابن أبي شیبة: ۱/۱۳۹)


۲- خواتین دونوں ہاتھ سینہ پر باندھیں۔ (حوالہ سابق)


۳- خواتین سجدہ سمٹ کر کریں، یعنی شکم کو ران اور بازوٴوں کو دونوں پہلوٴوں سے ملادیں: عن عبد اللہ بن عمرو فیہ: وإذا سجدت ألصَقتٴ بطنَھا بفخذیھا کأستر ما یکون بھا (کنز العمال: ۳/۱۱۷، بحوالہ بیہقي وابن عدي)


۴- خواتین دونوں قعدوں میں دونوں پاوٴوں داہنی طرف نکال کر سرین پر بیٹھیں: تسدل رجلیھا فتجعلھا في جانب یمینھا، قال أحمد: والسدل أعجب إليّ (المغني لابن قدامة: ۱/۵۶۲)


(۲) جو طریقہٴ نماز آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی امت کی عورتوں کے لیے بتایا، اسی کے مطابق ازواجِ مطہرات نے بھی نماز پڑھی۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات