معاشرت - اخلاق و آداب

Pakistan

سوال # 69143

حدیث شریف ہے کہ بہن کے گھر جاوٴ تو اپنی استطاعت کے مطابق کچھ لے کر جاوٴ کیونکہ بہنوں کا تم پر حق ہے، اگر میرے بھائی یا والدین آکر مجھے پیسے دیں عیدی وغیرہ تو ان پر صرف میرا حق ہے یا ساس، سسر اور شوہر کا بھی حق ہے؟ اگر کوئی کھانے پینے کی چیز لے کر آئے جیسے برگر وغیرہ جوکہ وہ جانتے ہوں کہ مجھے پسند ہے لیکن میرے گھر والے مجھے لاکر نہیں دیتے، تو ایسی چیزیں اگر وہ کبھی کبھار میرے لیے لے آئیں تو کیا یہ غلط ہے؟ اور کیا اگر وہ میں اکیلے کھانا چاہوں تو اس پر میرا حق ہے یا نہیں؟

Published on: Aug 29, 2016

جواب # 69143

بسم الله الرحمن الرحيم

Fatwa ID: 957-771/D=11/1437

حدیث شریف میں صلہ رحمی کی ترغیب آئی ہے جس میں بھائی بہن بھی شامل ہیں، البتہ سوال میں مذکورہ الفاظ میری نظر سے نہیں گذرے۔
آپ کے بھائی یا والدین آپ کو جو کچھ عیدی پیسے وغیرہ دیں اس پر آپ ہی کا حق ہے کسی اور کا نہیں، اور جو چیز وہ آپ کے لیے لائیں وہ بھی آپ ہی کی ہے آپ تنہاء اس کو استعمال کرسکتی ہیں البتہ اگر اخلاقا شوہر وغیرہ کو بھی دیدیں تو کوئی حرج نہیں، بلکہ بہتر ہے۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات