معاشرت - اخلاق و آداب

India

سوال # 62827

ضروری بات یہ ہے کہ میری شادی ہوئے چھ مہینے ہوچکے ہیں اور خوشی یہ بات یہ ہے کہ وہ حاملہ ہے اور میرے گھر میں ایک دوسرے کے بیچ محبت نہیں ہے ، ہمیشہ ایک دوسرے سے حسد رکھتے ہیں ، اس درمیان میں اپنی بیوی کو لے کر ماں باپ سے دور رہنا جائز ہے ؟ نہیں تو مجھے کیا کرنا چاہئے بتلائیں۔ میں بہت پریشان ہوں ۔
براہ کرم، کوئی راستہ دکھائیں جس سے میری فیملی میں اللہ رحمت آئے ۔ اللہ نے ایک طرف ماں باپ کا ثواب لکھا ہے تو دوسری طرف بیوی کا۔

Published on: Dec 24, 2015

جواب # 62827

بسم الله الرحمن الرحيم

Fatwa ID: 218-212/L=3/1437-U

(۱) بیوی کو اپنے والدین سے دور رکھنا جائز ہے اس میں شرعاً کوئی حرج نہیں ہے؛ البتہ اس کی وجہ سے والدین سے قطع تعلق جائز نہیں، اگر آپ ایسا کرسکتے ہوں کہ بیوی علیحدہ رہے اور والدین سے قطع تعلق کی بھی نوبت نہ آئے تو اس میں کوئی ممانعت نہیں ہے۔
(۲) آپس میں حسد وغیرہ دین سے ناواقفیت اور ایک دوسرے کے حقوق سے جہالت سے پیدا ہوتے ہیں اور اس کا واحد حل دین سے واقفیت اور ایک دوسرے کے حقوق کو پہچاننا ہے، آپ اگر اپنے گھر میں فضائل اعمال کی تعلیم شروع کردیں تو امید قوی ہے کہ باہمی اختلافات ختم ہوجائیں گے۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات