معاشرت - اخلاق و آداب

INDIA

سوال # 161676

حضرت،میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ اسلام میں ایک بچے کے حقوق کیا ہوتے ہیں ماں باپ کے لئے؟ کیا اس کو پیدا کرکے کام سکھانا چھوٹی عمر میں صحیح ہے؟ اور ایک بالغ لڑکے کے کیا حقوق کیا ہوتے ہیں اپنے ماں باپ کے لئے؟
برائے مہربانی اصلاح فرمادیں۔

Published on: May 30, 2018

جواب # 161676

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 986-863/D=9/1439



بچہ کی پرورش تعلیم و تربیت والد کی ذمہ داری ہے اگر گھرانہ پیشہ ورانہ ہے تو سمجھ دار ہو جانے پر اسے ہنر اور پیشہ سکھانا اور اگر تعلیم یافتہ گھرانہ ہے تو تعلیم کا بندو بست کرنا والد کی ذمہ داری ہے لیکن لڑکے کے بالغ ہونے کے بعد اس کا خرچ اور تعلیم دلانا والد پر واجب نہیں ہے ہاں اگر باپ باحیثیت ہے اور اس گھرانہ میں بالغ ہونے کے بعد بھی لڑکے کی تعلیم کا بندو بست والد کرتے ہیں تو پھر والد کو اس کا انتظام کرنا چاہئے (جیسا کہ متعارف ہے) ۔



اولاد کے ذمہ ہے کہ والدین کی اطاعت کرے۔ ان کے راحت رسانی کی فکر کرے والدین کو مالی یا جسمانی خدمت کی ضرورت ہو تو اسے انجام دے، کبھی کبھی ان کی زیارت کے لئے جائے اگر والدین ضرورت مند ہوں تو مالی یا جسمانی خدمت انجام دینا واجب ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات