معاشرت - اخلاق و آداب

India

سوال # 160110

اگر گھر کے کمرہ کی سمت کے حساب سے یا اندر ہونے کی وجہ سے بستر پورب اور پچھم پوزیشن میں ہو اور جب انسان بستر پر لیٹے ا س کے پیر خانہ کعبہ کی طرف پچھم میں ہو تو کیا بستر کی سمت ایسا ہونے پر کوئی گناہ ہے کہ وہ پچھم سائڈ خانہ کعبہ کی طرف ہے؟ کیا پچھم سائڈ میں بستر رکھ سکتے ہیں؟

Published on: Apr 14, 2018

جواب # 160110

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:784-723/M=7/1439



بیت اللہ کی تعظیم شرعاً مطلوب ہے، اور بیت اللہ یہاں سے سمت پچھم میں واقع ہے اس لیے پچھم یعنی قبلہ کی طرف پاوٴں کرکے سونا سوء ادب ہے اس لیے اگر کوئی عذر نہ ہو تو قبلہ کی طرف پیر کرکے سونے سے بچنا چاہیے، صورت مسئولہ میں آپ پورب کی طرف پیر کرکے سوسکتے ہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات