India

سوال # 165961

ہمارے سات ساتھی قربانی کرنے کیلے مل کر ایک گائے خریدی قربانی کے دن وہ گم ہوگئی فوراًیہ لوگ نیا دوسرا جانور خرید کر قربانی ادا کردیے پھر اسی شام میں گمشدہ جانور مل گیا اب اس جانور کو کیا کریں؟اگر صدقہ کرنا تو ذبح کرکے دینایا ویسا ہی دینا ہے ؟

Published on: Oct 30, 2018

جواب # 165961

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:279-72/N=2/1440



صورت مسئولہ میں اگر سب شرکاء صاحب نصاب تھے، یعنی: ان پر قربانی واجب تھی تو وہ پہلا جانور باہمی رضامندی سے جو چاہیں، کریں، خواہ اس کی نفلی قربانی کردیں یا فروخت کردیں یا پال لیں؛ البتہ دوسری اور تیسری صورت میں اگر پہلے جانور کی قیمت دوسرے جانور سے زیادہ ہو تو ہر شریک اپنے حصے کی زائد قیمت کسی غریب کو دیدے۔



ولو ضلت أو سرقت فشری أخری فظھرت فعلی الغني إحداھما وعلی الفقیر کلاھما، شمني (الدر المختار مع رد المحتار، کتاب الأضحیة، ۹: ۴۷۱، ط: مکتبة زکریا دیوبند)، قولہ: ”فعلی الغني إحداھما“: أي: علی التفصیل المار من أنہ لو ضحی بالأولی أجزأہ ولا یلزمہ شیٴ ولو قیمتھا أقل، وإن ضحی بالثانیة وقیمتھا أقل تصدق بالزائد، قال في البدائع: إلا إذا ضحی بالأولی أیضاً فتسقط الصدقة ؛ لأنہ أدی الأصل في وقتہ فیسقط الخلف (رد المحتار)۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات