India

سوال # 155003

چھ افراد نے مل کر قربانی کی اور ساتواں حصہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف سے سب نے مل کر برابر پیسے دیکر کیا۔ کیا اس طرح قربانی درست ہو گئی ؟

Published on: Nov 9, 2017

جواب # 155003

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:25-45/B=2/1439



صورت مسئولہ میں ساتواں حصہ جو چھ آدمیوں کی طرف سے کیا گیا تو چونکہ سُبع (ساتویں) حصہ سے کم ہوگیا اس لیے ساتویں حصے کی قربانی صحیح نہ ہوگی، ہاں اگر وہ چھ آدمی پیسے دے کر کسی اپنے ایک ساتھ کو مالک بنادیں اور وہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف سے کردے تو قربانی درست ہوجائے گی، قربانی میں کوئی حصہ 1/7 (ساتویں) سے کم نہ ہونا چاہیے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات