India

سوال # 152719

میں نے ایک بکری کا بچہ ۲نومبر ۲۰۱۶ کو خریدا تھا جس کی عمر اس وقت تقریباً ڈھائی مہینے کی تھی۔ تقریباً ایک مہینے پہلے اس کا ایکسیڈنٹ ہو گیا جس میں اس کے سر میں چوٹ لگنے سے ایک سینگ جڑ سے ہل گیا ہے اور ابھی زخم پوری طرح سے صحیح نہیں ہے ۔ ڈاکٹر کے مطابق چوٹ لگا ہوا سینگ دھیرے دھیرے اوتر جا ئے گاا اور نیا سینگ آجا ئے گا، کیا میں اس بقرے کی قربانی اس سال کر سکتا ہوں؟ جواب کا منتظر ہوں۔ شکریہ

Published on: Jul 27, 2017

جواب # 152719

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 1084-1017/sd=11/1438



اگر سینگ کے جڑ سے ہلنے کی وجہ سے اس کا اثر دماغ تک نہیں پہنچا ہے ، تو حسب شرائط اس بکرے کی قربانی کرنا جائز ہے۔ (قولہ ویضحی بالجماء) ہی التی لا قرن لہا خلقة وکذا العظماء التی ذہب بعض قرنہا بالکسر أو غیرہ، فإن بلغ الکسر إلی المخ لم یجز قہستانی، وفی البدائع إن بلغ الکسر المشاش لا یجزء والمشاش رء وس العظام مثل الرکبتین والمرفقین اہ



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات