معاملات - دیگر معاملات

Pakistan

سوال # 148766

میرے ایک استاذ ہیں جن سے میں نے بہت اسلامیات سیکھے ہیں، اس استاذ کی میں بہت عزت کرتا ہوں او رہر بات مانتا ہوں، استاذ نے مجھے گناہ نہ کرنے کی نصیحت کی تھی، اب جب گناہ میرے سامنے آتا ہے تو میں استاذ کو یاد کر کے گناہ چھوڑ دیتا ہوں، گناہ کا چھوڑنا صرف اللہ پاک کی رضا کے لیے ہے لیکن استاذ کو یاد کرکے، اگر کبھی استاذ کا خیال نہ رہے تو گناہ ہو جاتا ہے۔ آپ میری رہنمائی کیجئے، کیا میرا یہ عمل درست ہے؟

Published on: Feb 16, 2017

جواب # 148766

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 614-499/H=5/1438



استاذ کی نصیحت اوراحسانات کو یاد کرکے اللہ پاک کی رضا حاصل کرنے کی نیت سے گناہ چھوڑدیتے ہیں آپ کا یہ عمل درست ہے ہمیشہ اس کو یاد داشت میں محفوظ رکھئے تاکہ گناہ سے اچھی طرح بچنے پر جماوٴ پیدا ہوجائے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات