معاملات - دیگر معاملات

India

سوال # 148580

میں ایک مدرسہ میں مدرس ہوں مہتمم صاحب مجھے کوئی رقم دے اور کہے کہ اس سے سپارے خرید کر بچوں کو دے دینا وہ سپارے عام طور پر ۱۰۰ روپئے میں ملتے ہیں اور میں اسے ہول سیل میں ۶۰ روپئے میں آتے ہیں لاتا ہوں اور عام بازاری ریٹ یعنی ۱۰۰ روپے سے کم ۸۰ یا ۹۰ روپے کے حساب سے .بچوں میں تقسیم کرتا ہوں اور جو ۱۰ یا ۲۰ روپے ہیں اس کو میں اپنے پاس رکھ لیتا ہوں تو کیا اس رقم کا میرے پاس رکھنا جائز ہے ؟

Published on: Feb 16, 2017

جواب # 148580

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 581-478/H=5/1438



مہتمم کی دی ہوئی کل رقم سے پارے خریدکر بچوں کو تقسیم کرنا واجب ہے، دس بیس یا کم وبیش روپئے مذکور فی السوال طریقہ اپناکر بچاکر خود رکھ لینا جائز نہیں اب تک اس طریق پر جو رقم بچائی ہے اتنی رقم کے بھی پارے خریدکر بچوں میں تقسیم کرنا آپ کے ذمہ واجب ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات