معاملات - دیگر معاملات

India

سوال # 146516

میں اپنی لازمی ضروریات کا مکمل خیال رکھنے کے بعد اپنی بچی ہوئی رقم کی سرمایہ کاری کرنا چاہتاہوں تو کیا مجھے اپنے والد صاحب سے مشورہ کرنے اور ان کی اجازت لینے کی ضرورت ہے؟در حقیقت ، والدین ، بھائی بہن اورخود اپنی فیملی کے لیے تئیں بیٹے کی کمائی کے حوالے سے اس پر کیا ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں؟

Published on: Dec 4, 2016

جواب # 146516

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 246-199/L=2/1438



آپ اپنی کمائی ہوئی رقم کے خود مالک ہیں، اس رقم میں آپ کے والد یا بھائی بہنوں کا کوئی حصہ نہیں ہے، اگر آپ اپنی بچی ہوئی رقم کی سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں تو شرعاً اس کی اجازت ہے، اس کے لیے اپنے والد وغیرہ سے مشورہ لینا ضروری نہیں، اگر آپ مناسب سمجھیں تو مشورہ لے سکتے ہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات