عبادات - قسم و نذر

dubai

سوال # 67695

مجھے ارجنٹ ایک فتویٰ چا ہئے اپنی صفائی بیان کرنے کے لئے سچا قرآن کا حلف اٹھا سکتے ہیں.؟ اور اگر اٹھا لے تو اسکا گناہ کیا ہے سچ پر؟اور اگر جھوٹا کوئی اٹھا لے تو اس کا گناہ کیا ہے ؟

Published on: Aug 7, 2016

جواب # 67695

بسم الله الرحمن الرحيم

Fatwa ID: 1133-1144/N=11-1437

(۱، ۲) : اظہار صداقت کے لیے قرآن شریف کی سچی قسم کھانا درست ہے ، مفتی بہ قول یہی ہے ، البتہ بہتر یہ ہے کہ اللہ تعالی یا اس کی کسی خاص صفت کی قسم کھائی جائے۔ اور اگر کسی نے قرآن پاک کی جھوٹی قسم کھائی تو وہ سخت گنہگار ہوگا اور اس پر سچی پکی توبہ اور استغفار لازم ہوگا، قال الکمال: ولا یخفی أن الحلف بالقرآن الآن متعارفاً فیکون یمیناً (در مختار مع شامی ۴۸۴، ۴۸۵، مطبوعہ: مکتبہ زکریا دیوبند) ، نیز بہشتی زیور مدلل (۳: ۵۱، مسئلہ: ۴، مطبوعہ: کتب خانہ اختری متصل مظاہر علوم سہارن پور) دیکھیں۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات