عبادات - قسم و نذر

INDIA

سوال # 159877

میں نے منت رکھا کہ اگر میری والدہ صحت یاب ہو جائے تو میں پانچ روزہ رکھوں گا اور میں یہ چاہتا ہوں کہ اس روزہ کو لگاتار نہ رکھ کر کبھی کبھی رکھوں تو کیا یہ درست ہوگا؟

Published on: Mar 30, 2018

جواب # 159877

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:698-586/D=7/1439



جی ہاں! آپ نذر کے پانچ روزے الگ الگ بھی رکھ سکتے ہیں، لگاتار رکھنا ضروری نہیں ہے۔



وأما إذا کان لشہر غیر معین فإن شاء تابعہ وإن شاء فرقہ إلخ (الدر مع الرد: ۵/۵۲۵، ط: زکریا، دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات