عبادات - قسم و نذر

India

سوال # 157658

دیکھنے میں آیا ہے کہ سیاسی مسلمان جب الیکشن میں جیت کے بعد حلف برداری کرتے ہیں تو ایشور کی قسم کے ساتھ کرتے ہیں کیا مسلمانوں کے لیے یہ ام جائز ہے کیا ایشور معنی کے اعتبار سے اللہ ہی کے معنی میں آتا ہے ؟جواب سے نوازیں۔

Published on: Feb 11, 2018

جواب # 157658

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 447-443/SN=5/1439



اردو لغت اسی طرح لوگوں کے بول چال سے معلوم ہوتا ہے کہ ”ایشور“ ”اللہ“ کا مترادف ہے جیسے ”خدا“ ”اللہ“ کے مترادف کے طور پر استعمال ہوتا ہے، فقہاء نے یہ صراحت کی ہے کہ قرآن وحدیث کے اندر ”اللہ“ تعالیٰ کے جو اسماء وصفات عربی میں آئے ہیں، دیگر زبانوں میں ان کا جو ترجمہ ہو اسی طرح ان کے جو مترادف الفاظ ہوں ان کا استعمال بھی ”اللہ“ کے لیے جائز ہے۔



امداد الفتاوی میں ہے: من الأسماء التوقیفیة علم ومنہا ألقاب وأوصاف وترجمة اللفظ بمنزلتہ فالأسماء العجمیة ترجمة تلک الألقاب والأوصاف ”لذا انعقد الإجماع علی إطلاقہا الخ (امداد الفتاوی: ۴/ ۵۱۳، مسائل شتی سوال: ۵۷۵، ط: کراچی)؛ لہٰذا صورت مسئولہ میں ”ایشور“ کے لفظ کے ساتھ میں مسلمان ممبران کے لیے حلف اٹھانے کی گنجائش ہوگی، گو بہتر یہی ہے کہ ”اللہ“ کے نام پر حلف اٹھائیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات