معاشرت - نکاح

pakistan

سوال # 157243

محترم جناب مفتی صاحب میرا سوال یہ ہے کہ کوئی شخص شادی کے بعد بچے پیدا نہ کرے تو کیا اس میں کوئی گناہ ہے اگر بیوی بھی اس پر راضی ہو؟

Published on: Dec 27, 2017

جواب # 157243

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:282-245/M=4/1439



شادی کے بعد شوہر اگر چاہے کہ فوراً بچہ پیدا نہ ہو اوراس کے لیے بیوی کی رضامندی سے عارضی طور پر ایسی تدبیر اختیار کرے جس سے استقرار حمل نہ ہو تو شرعاً اگرچہ اس کی گنجائش ہے لیکن اگر بیوی کی صحت کمزور نہیں ہے اور کوئی عذر مانع نہیں ہے تو ایسا کرنا شریعت کی نظر میں پسندیدہ نہیں، نکاح کے مقاصد میں یہ بھی داخل ہے کہ توالد وتناسل کا سلسلہ قائم ہو اور کثرت امم کی بنا پر حضور صلی اللہ علیہ وسلم بروز محشر فخر فرمائیں گے اس لیے بلاعذر اولاد سے بچنے کا جذبہ مستحسن نہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات